X
تبلیغات
رایتل
پنج‌شنبه 16 شهریور‌ماه سال 1385

این وجہ اللہ الذی الیہ یتوجہ الاولیاء

نوشته شده توسط سید محمد صادق شرف الدین در ساعت 00:25

اُشہد اللہ واشہدُکم 

 

میں خدا کو گواہ کرکے کہتا ہوں اور آپ حضرات کو بھی گواہ بناتاہوں کہ

 

 

انی مومن بکم و بما آمنتم بہ

 

میں آپ پر بھی ایمان رکھتاہوں اور ان تمام چیزوں پر ایمان رکھتا ہوں جن پر آپ یقین رکھتے

 

 ہیں ۔

 

کافرٌ بعدوّ کم و بما کفرتم بہ

 

آپ کے دشمنوں کا بھی انکار کرتاہوں اور ہر اس چیز کا انکار کرتا ہوں جس کا آپ نے انکار

 

کیا ہو

 

مبغض ٌ لاعدائکم و معادلہم سلم لمن سالمکم و حرب لم حاربکم محقق لما حققتم

 

آپ کے دشمنوں کا دشمن اور مخالف ہوں جس سے آپ صلح کریں اس سے میری صلح ، جس

 

سے آپ جنگ کریں اس سے میری جنگ، جس کو آپ حق کہیں اسے حق ماننے والا

 

محتجب بذمتکم ، معترفٌ بکم ، مومنٌ بایابکم ، مصدق برجعتکم ، منتظرٌ لامرکم

 

آپ کے عہد وپیمان کا ذمہ دار،آپ کا اعتراف کرنے والا ، آپ کی آمد کا ایمان رکھنے والا، آپ

 

کی رجعت پر یقین رکھنے والا، آپ کے دور حکومت کا انتظار کرنے والا

 

(اقتباس از زیارت جامعہ (حضرت امام علی النقی (ع) کی زبان پر جاری ہونے والا معرفت امام (ع) کا انمول خزینہ ))

 


این معزالاولیاء و مذل الاعدآء

 

این جامع الکلمۃ علی التقوی

 

این باب اللہ الذی منہ یؤتی

 

این وجہ اللہ الذی الیہ یتوجہ الاولیاء

 

این صاحب یوم الفتح وناشر رایۃ الہدی

 

این الطالب بذحول الانبیآء

 

این الطالب بدم المقتول بکربلاء